19th April 2021

K2 TV MANCHESTER

WE ARE WITH YOU EVERYDAY EVERYWHERE

زہرا کا تعلق تیونس سے تھا ۔ وہ جب بھی میرے دفتر آتی تو میں اسے احترام دیئے بغیر نہیں رہ سکتا تھا

1 min read

زہرا کا تعلق تیونس سے تھا ۔ وہ جب بھی میرے دفتر آتی تو میں اسے احترام دیئے بغیر نہیں رہ سکتا تھا کیونکہ تیونس میں حجاب پر قانونی پابندی تھی لیکن وہ چونکہ اب اٹلی میں رہتی تھی اس لئے وہ حجاب کرتی تھی۔ دین سے اس کی یہ محبت مجھے ہمیشہ متاثر کرتی وہ ہمیشہ اپنے گیارہ سالہ بیٹے یا خاوند کے ساتھ آتی ۔

ایک دن دفتر آئی تو بہت خوش تھی کہنے لگی آج مجھے جلدی گھر جانا ہے بہت سے مہمان بلائے ہوئے ہیں ۔ میں نے پوچھا آج کیا کوئی خاص پروگرام ہے ؟ حیرت سے میری طرف دیکھ کر کہنی لگی آج عید المولد النبی صلی الله علیه وسلم ہے ۔

میرے لئے کسی عرب خاتون سے یہ سنناعجیب تھا ۔ کیونکہ مجھے بچپن سے علما ء نے یہی بتایا تھا کہ عربی ایسا کوئی دن نہیں مناتے ۔

میں نے پوچھا کیا تم عید میلاد مناتی ہو ۔ کہنے لگی ہاں میں تو ہر سال اس دن اپنی تمام دوستوں کی دعوت کرتی ہوں ۔ ہم مہندی لگاتی ہیں ، اچھے اچھے کھانے تیار کرتی ہیں پھر اکٹھے ہو کر درودوسلام کا اہتمام کرتی ہیں اپنے بچوں کو نبی مکرم صلی الله علیه وسلم کی حیات طیبہ کے واقعات سناتے ہیں ۔ میں نے حیرت سے کہا لیکن کچھ علما ءکا خیال ہے کہ یہ نہیں منانا چاہیے ۔یہ بدعت ہے ۔ ہنسنا شروع ہو گئی کہنے لگی عجیب بات کرتے ہو ۔ میں اپنے بیٹے کی سالگرہ مناتی ہوں ، اپنے خاوند کی سالگرہ پر اہتمام کرتی ہوں اور تو اور اپنی شادی کی اینورسری پر خاوند کے لئے تحفے خریدتی ہوں ۔

اپنی نظریں جھکا کر کہنے لگی میرے نبی صلی الله علیه وسلم سے محبت تو ان سب رشتوں سے کہیں زیادہ ہے کیا ان کی پیدائش کے دن میں کچھ اہتمام نہ کروں ۔ میں نے اسے پھر ٹوکا میں نے کہا لیکن اہل عقل تو کہتے ہیں ۔۔۔۔۔

اس نے میری بات کاٹتے ہوئے کہا کہ ”یاد رکھو ۔ جن باتوں کا تعلق دل سے ہو ان کے لئے کسی اہل عقل سے پوچھنے نہیں جاتے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔“

اس کا ایک جملہ میرے ذہن کی ساری الجھنیں دور کر گیا ۔میرے تشکیک کو ایقان میں بدل گیا

محمود اصغر چوہدری

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.