9th May 2021

K2 TV MANCHESTER

WE ARE WITH YOU EVERYDAY EVERYWHERE

ہم من حیث الُقوم متحد کب ہو نگے؟شکیل قمر مانچسٹر

1 min read

ہم من حیث الُقوم متحد کب ہو نگے؟شکیل قمر مانچسٹر 

میں اکثر سوچتا ہوں کہ بحیثیت پاکستانی قوم ہم لوگ بہت ہی جفا کش ،محنتی اور ایماندارہونے کے ساتھ ساتھ انتہائی قوم پرست اور

اپنے ہم وطنوں سے انتہائی پیار کرنے والے لوگ ہیں لیکن اس کے باوجود آج مِن حیث اُلقوم ہم پستیوں کو چھو رہے ہیں دنیا بھر میں ہماری

قدرومنزلت انتہائی گراوٹ کا شکار ہے ناصرف باہر والے ہم پر ہنستے ہیں بلکہ ہم خود بھی اسی گو مگو میں گرفتار ہیں کہ کیا واقعی آج ہم ایک ایسی

قوم بن چکے ہیں جو انتہائی انتشار کا شکار ہے اور جس کی صفوں میں اتحاد نام کی کوئی چیز دکھائی نہیں دے رہی بلکہ ہمارے آپس کے اختلافات

نے اس قدر گھنؤنی شکل اختیار کر رکھی ہے کہ ہمارے دشمن ہماری سیاسی گروہی ،مذہبی فرقہ وارانہ اور لسانی دھڑے بندیوں کو استعمال کر کے ہم کو (خاکم بدہن) صفہء ہستی سے مٹادینے کی سازشیں کر رہے ہیں ۔ہم مسلمان ہیں اور ایک پاکستانی قوم ہیں اس لحاظ سے یہ بات تو آسا

نی سے سمجھ میں آتی ہے کہ اسلام دشمن قوتیں اور خطے میں اپنی حاکمیت قائم کرنے والے ممالک ہمیں ختم کردینے کے درپے ہیں مگر یہ کون

لوگ ہیں جو ہمارے اندر سے اُٹھ کر ہمیں نقصان پہنچارہے ہیں اور دشمنوں کے مقاصدکو تقویت پہنچارہے ہیں یہ کوئی پاکستانی نہیں ہو سکتے اور نہ ہی یہ لوگ مسلمان ہو سکتے ہیں ،ظاہر ہے کہ جو لوگ مسلمانوں کو نقصان پہنچارہے ہیں وہ کیسے مسلمان ہیں اور جو لوگ پاکستان اور

پاکستانی قوم کو نقصان پہنچارہے ہیں وہ کیسے پاکستانی ہیں ؟لہذا اَب وقت آچکا ہے کہ ہم اس بات کا فیصلہ کریں کہ ہماری صفوں کے اندر سے ہمیں نقصان پہنچانے والے دشمن کون ہیں اور وہ کس کے اشاروں پر ایسا کر رہے ہیں ۔دنیا ایک گلوبل ولج بن چکی ہے اور میڈیا بے انتہا ترقی کرچکا ہے ایسے میں اپنے اَصل دشمنوں کو پہچانناکوئی مشکل کام نہیں ہے بشرط یہ کہ قوم کے اَصل اور مخلص رہنما یہ فریضہ سر انجام دینے کے لئے قوم کی صیحح رہنمائی کریں اور ذاتی اور فروعی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر ملک اور قوم کو بچانے کے عظیم مقاصد کے لئے قوم کی صیحح

رہنمائی کریں اور قوم کو بتایں کہ یہ لوگ کون ہیں جو ہماری صفوں میں چھپے بیٹھے ہیں اور در پردہ غیر ملکی دشمنوں کے اشاروں پرناچتے ہوئے اپنے ہی ملک اور قوم کو برباد کرنے پر تُلے ہوئے ہیں ۔موجودہ دور میں غیر ملکی دشمنوں کا مقابلہ کرنا کوئی مشکل کام نہیں ہے لیکن مشکل بات یہ ہے کہ وہ لوگ جو ہمارے اپنے ہیں اور وہ چند ٹکّوں کے عوض اپنے ضمیر کو بیچ کر غیر ملکی دشمنوں کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں اُن کو تلاش کرنا اور اُن کا کلا قمہ کرنا بہت ضروری ہے ۔جیسا کہ سب جانتے ہیں کہ ہر ملک کا ایک قانون ہوتا ہے اور ہر شہری کو اُس قانون کا پابند ہونا 

پڑتا ہے اگر کوئی بھی شخص اپنے ہی ملک کے قانون کی خلاف ورزی کرئے تو پھر اُس ملک کے عسکری ادارے اس بات کا حق محفوظ رکھتے ہیں

کہ قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کو کیفرِکردار تک پہنچائیں بیشک اس فریضہ کو سر انجام دینے کے لئے ملکی عسکری اداروں کو کسی بھی حد

تک جانا پڑے ۔افسوس اس بات کا ہے کہ ہمارے غیر ملکی دشمن کُھل کر سامنے نہیں آتے اور اپنی دولت کے بل بوتے پر ہماری ہی صفوں میں

چھپی ہوئی کالی بھیڑوں کو استعمال کرکے ہمارے ملک اور قوم کو برباد کرنے پر تُلے ہوئے ہیں ان حالات میں مزید افسوس ناک بات یہ ہے کہ ہماری سیاسی جماعتوں اور مذہبی گروہوں کو ملک اورقوم کے اتحاد سے زیادہ اپنی دوکانداری چمکانے میں دلچسپی ہے جتنے بھی سیاسی اور مذہبی گروہ ہیں وہ موجودہ حالات میں اپنی اپنی دوکانداری چمکانے میں مصروف ہیں اور کسی کو بھی ملک اور قوم کے وسیع تر مفاد کی کوئی پرواہ 

نہیں ہے اگر ذرا غور سے دیکھا جائے تو آج ہمارے ملک میں سیاسی اور مذہبی گروہوں کی وجہ سے ہی یہ نوبت آئی ہے اور ہر کوئی جانتا ہے کہ

ہماری قوم جس انتشار کا شکار ہے اُس کی ذمہ داری بھی سیاسی اور مذہبی گروہوں پر ہی عائد ہوتی ہے آج ملک جس مشکل ترین دور سے گذر 

رہا ہے اُس کے لئے چاہیے تو یہ تھا کہ تمام سیاسی جماعتیں اور مذہبی گروہ آپس کے اختلافات کو پسِ پشت ڈال کر وسیع تر ملکی اور قومی مفاد کی 

خاطرایک پلیٹ فارم پرجمع ہو جاتے اور غیر ملکی دشمنوں کے ساتھ ساتھ اپنے ملک کے اندر چھپے ہوئے دشمنوں کے مقابے کے لئے اُٹھ کھڑے ہوتے ۔

E MAIL<<<<

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.