ابھی تو ابتدائے عشق ہے۔


ابھی تو ابتدائے عشق ہے۔

پوری قوم خوشی سے جھوم رہی ہے کہ نوازشریف کو 10 سال قید مریم کو 7 سال قید ہوئی اور لندن فلیٹ ضبط ہوگئے لیکن پاکستانی قوم کو شاید پتہ نہیں کہ اصل کیس کا فیصلہ تو ابھی سامنے آیا ہی نہیں ہے۔ جب فیصلہ سامنے آئے گا تو آج تک اتنا تہلکہ نہیں مچا ہوگا جتنا شور و تہلکہ مچے گا ۔ وہ کیس ہے ہل میٹل اور فلیگ شپ کیس۔

آپ کو یاد ہوگا کہ نوازشریف کا اقامہ نکلا تھا اور قوم بھی حیران ہوئی تھی کہ ججوں نے اقامہ پر نوازشریف کو کیوں نااہل کیا اور نوازشریف نے پوری دنیا میں شور مچایا کہ مجھے اقامے پر نکالا۔ آپ جانتے ہیں کہ ججوں نے اقامے پر کیوں نکالا؟ کیا اقامہ ویزہ لینے کے لئے تھا؟ جی نہیں!

وزیراعظم کے پاس ریڈ پاسپورٹ ہوتا ہے اسکو ویزا کی عام پاکستانیوں کی طرح کیا ضرورت۔ اصل کہانی یہ تھی اس نوازشریف نے جو اقامہ لیا تھا اس کی بنیاد پر دنیا بھر میں جس میں سوئس بینکوں ملیشیاء ، آئیر لینڈ بھارت سمیت دنیا بھر میں کھربوں ڈالرز کے اکاؤنٹ کھولے۔ جب آپ اقامہ لے کر دنیا بھر میں کمپنیاں کھول کر کاروبار کرتے ہیں تو اس پر یہ نہیں لکھا ہوتا کہ آپ کس جگہ سے ہیں اس پر اقامے پر موجود نام اڈریس ہوتا یعنی پتہ صرف یہ چلتا ہے کہ یہ پیسہ دبئی کے کسی شہری کا ہے یعنی نواز نامی دبئی کا بندہ۔ اب ججوں کو جب جے آئی ٹی نے تہلکہ خیز ثبوت نکال کر دیئے تو ججوں نے نوازشریف کو اس کیس پر نااہل کیا تاکہ اس کے پیچھے چھپے اربوں ڈالرز پاکستان آئیں۔ اب آپ کو یاد ہوگا کہ نوازشریف نے درخواستیں دائر کی تھی کہ تینوں ریفرنس کو ایک ساتھ سنا جائے اور انکا فیصلہ بھی ایک ساتھ دیا جائے اسکی وجہ یہ تھی کہ نوازشریف چاہتا تھا کہ فیصلہ آئے تو میں بے شک جیل چلا جاؤں مگر یہ کہوں کہ دیکھئے جی وہی اقامے پر کام ہوا۔ نیب کے جج نے انکار کر دیا۔ پہلے لندن فلیٹ پر سزا سنائی اس پر جرمانہ ہوا لیکن اب جو ہل میٹل فلیگ شپ کیس کا فیصلہ آئے گا اس سے پاکستان میں نہیں بلکہ دنیا بھر میں تہلکہ مچ جائے گا۔ دبئی کی حکومت تک ہل جائے گی کیونکہ نوازشریف ا ور اسکے بچے، جس میں کلثوم نواز بھی شامل ہے، اسکا اقامہ بھی ہے انہوں نے اس کمپنی کے زریعے 30 ممالک میں پیسا رکھا ہوا ہے، پراپرٹیز رکھی ہوئی ہیں اور اسکا پیسہ بھارتی خفیہ ایجنسی را کے دہشتگردوں، پاکستانی طالبان کے دہشتگردوں سمیت داعش کے دہشتگردوں تک بھی جاتا ہے۔ اس کا پیسہ سی آئی اے کے ایجنٹوں تک بھی جاتا ہے جو بعد میں ریمنڈ ڈیوس بن کر پاکستان میں حملہ کرتے ہیں۔ آپ کو یہ بھی یاد ہوگا کہ ریمنڈ ڈیویس کے واپس بھجوانے میں نوازشریف اور شہبازشریف کا ہاتھ تھا۔ حقیقت تو آپ پہلے سے جانتے ہیں۔ ریمنڈ ڈیویس کے اصل کیس کے بارے میں کہ کیسے نوازشریف نے سازش کھیلی تھی جبکہ جنرل پاشا نے اس پر سٹینڈ لے لیا تھا۔ ریمنڈ ڈیویس اپنی کتاب میں لکھ چکا ہے کہ امریکہ کے کہنے پر جنرل پاشا کے خلاف شدید رد عمل تھا ن لیگیوں کو جنرل پاشا کے خلاف استعمال کیا گیا اور پھر ریمنڈ ڈیوس کے زریعے انکے خلاف پراپیگنڈا بھی کیا گیا۔

اب نوازشریف کے اس کیس کا جب فیصلہ آئے گا تو امریکہ بھارت دبئی سمیت دنیا بھر میں تہلکہ مچ جائے گا۔ٹرانپیرنسی انٹرنینشل سمیت ہر جگہ منی لانڈرنگ کے بڑے بڑے گروپ پکڑے جائیں گے۔ دہشتگردوں کو کس طرح دبئی کی مدد سے پیسہ جاتا ہے، یہ کیس اتنا بڑا ہوگا کہ اسکے بعد زرداری سمیت اے این پی اور دوسری جماعتوں کا ستیاس ہوجائے گا کیونکہ سب کا تعلق انہی وارداتوں سے ہے۔ قوم اس کیس کو بھول جائے گی دعا کریں کہ اللہ پاکستانی ججوں اور نیب کو ہمت دے کہ وہ ایسے ہی بڑے فیصلے کرے اور وطن عزیز کو ان دہشت گردوں سے پاک کرنے کی توفیق عطا فرمائیں آمین۔

ایک بہت محترم دوست کی کاوش آپ تک پہنچا رہا ہوں۔ امید ہے کہ قوم کو اصلیت تک پہنچنے میں دشواری نہیں ہوگی۔ انشاءاللہ۔

331total visits,1visits today

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *