12اگست کو دنیا بھر میں نوجوانوں کے عالمی دن کے طور پر منایا گیا ، اس حوالے سے پاکستان میں بھی نوجوانوں کے مسائل اور معاشی و معاشرتی ترقی میں نوجوانوں کے کلیدی کردار کی اہمیت ا


نوجوانوں کے عالمی دن کے موقع پر ایورڈ تقریب کا انعقاد

12اگست کو دنیا بھر میں نوجوانوں کے عالمی دن کے طور پر منایا گیا ، اس حوالے سے پاکستان میں بھی نوجوانوں کے مسائل اور معاشی و معاشرتی ترقی میں نوجوانوں کے کلیدی کردار کی اہمیت اجاگر کرنے کے لئے مختلف تقریبات کا انعقاد کیا گیا جبکہ اس ضمن میں انٹر یونیورسٹی کنثورشیم برائے فروغ سوشل سائسز کے زیر اہتمام وفاقی ہائر ایجو کیشن کمشین اسلام آباد میں یوتھ ایوارڈ 2018کا انعقاد بھی کیا گیا ،ایوارڈ تقریب میں فلاحی سیاسی اور سماجی با لخصوص شعبہ تعلیم میں خدمات سر انجام دینے والے نوجوانوں کو ایوارڈ زسے نوازا گیا اور نومبر 2018میں منعقد ہونے والے بینالاقوامی سٹوڈنٹس کنونشن کا لوگو بھی لانچ کیا گیا ۔تقریب میں ایگزیکٹو ڈائریکٹر پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف پارلیمنٹری سروسز ظفر اللہ خان، ممبر قومی اسمبلی طاہر اقبال چوہدری، ڈائریکٹر جنرل ہائر ایجو کیشن کمیشن فرمان اللہ انجم، ریکٹر مسلم یوتھ یونیورسٹی اسلام آبادپروفیسر ڈاکٹر طاہر حجازی ،ممتاز کاروباری شخصیت ظفر بختاوری،کو آرڈینیٹر انٹر یونیورسٹی کنثورشیم محمد مرتضیٰ نور، چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے لوکل گورئمنٹ ،فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس زاہد اقبال چوہدری سمیت ملک بھر سے علمی اور سماجی شخصیات کے علاوہ نوجوانوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔اس موقع پر تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے ظفر اللہ خان نے کہا کہ بلا شبہ نوجوان نسل کو محفوظ مواقع کی اشد ضرورت ہے جہاں پر وہ مختلف سر گرمیوں میں اپنی موثر شمولیت کو یقینی بناتے ہوئے اپنی ضروریات پوری کر سکیں اور مفادات کا تحفظ کر سکیں ، یہ بھی ضروری ہے کہ نوجوان فیصلہ سازی کے عمل میں اپنی شرکت یقینی بناتے ہوئے اپنے خیالات کا اظہار آازادادنہ طور پر کر سکیں ۔ممبر قومی اسمبلی طاہر اقبال چوہدری نے کہا کہ ہمیں امن ،اقتصادی ترقی اور سماجی انصاف چاہئے تو ہمیں نوجوانوں کی صلاحیتوں کو صحیح سمت میں بروئے کار لانا ہوگا۔ ظفر اللہ خان کا مزید کہنا تھا کہ، ہمیں ملکی ترقی میں نوجوانوں کی شمولیت کو یقینی بنانا ہوگا اور جن امور سے نوجوانوں کا براہ راست تعلق ہے انہیں ان میں موثر اور فعال کردادر ادا کرنے کے لئے مواقع فراہم کرناہونگے ۔ڈائریکٹر جنرل ہائر ایجو کیشن کمیشن فرمان اللہ انجم نے کہا کہ قوموں کی ترقی کا راز تعلیم میں مضمر ہے، ایچ ای سی اعلیٰ تعلیمی شعبہ کی بہتری کے لئے کوشاں ہے ۔محمد مرتضیٰ نور نے نوجوانوں کیلئے تعلیم وتربیت اور اچھی ملازمتوں تک رسائی کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا بھر کے نوجوانوں کو بہترین مواقع کی ضرورت ہے تاکہ وہ آزادادنہ طور پر اپنے خیالات کا اظہار کر سکیں اور اپنے خوابوں کو عملی جامہ پہنا سکیں ،دنیا بھر کی امیدیں نوجوانوں سے وابستہ ہیں ،اگر نوجوانوں کی بڑی تعداد پاکستان کے لئے ایک چیلنج کی حیثیت بھی اختیار کر چکی ہے کیونکہ نوجوان نسل کو معیاری تعلیم کے ساتھ فیصلہ سازی کے امور میں بھی شامل کیا جائے تاکہ ان کی صلاحیتوں سے بھرپور فائدہ اٹھایا جا سکے۔تقریب کے اختتام پر مشترکہ اعلامیہ پیش کیا گیا جس میں مطالبہ کیا گیا کہ نوجوان نسل کو بنیادی سہولیات اور بھر پور مواقع فراہم کرنے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں اور وفاقی اور صوبائی سطح پر نوجوانوں کے مسائل کے حل کے لئے طویل المدتی اور شارٹ ٹرم منصوبے تشکیل دئے جائیں ۔ جی ڈی پی کا 4فیصد تعلیم اور مجموعی تعلیمی بجٹ کا25فیصد اعلیٰ تعلیم کے لئے مختص کیا جائے اور نوجوان نسل کے مسائل کے حل کے لئے تمام جماعتیں مشترکہ حکمت عملی تشکیل دیں،نوجوان نسل میں اعتماد سازی کے عمل کو پروان چڑھایا جائے تاکہ امن ، برداشت کا جذبہ پیدا ہو۔

102total visits,1visits today

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *